ؒؒؒؒؒؒلوگ کہتے ہیں کہ معجزہ ہر انسان کی زندگی میں کم از کم ایک عضو ہوتا ہے۔ بہر حال اگر آپ ذاتی طور ایک مضبوط شخیصت کے مالک ہیں جن کو یقین ہے کہ وہ ہر طرح سے اور ہر چیز کا زندگی میں مقابلہ کر سکتے ہے۔ تو پھر آپ کو روکا نہیں جا سکتا۔ دوسرے لفظوں میں آپ نا قابل یقین ہو۔
انسانی زندگی کا میعار اُسکی صحت ہے۔ جو کہ وہ رکھتا ہے۔ اسی لیے جب لوگوں کے جسم پر کسی قسم کی بیماری نماںہوتی ہے یا اُسکا سامنا کرنا پڑتا ہے تو وہ ایک آفت ہوتی ہے۔ کنیسر(سرطان) بھی اُن آفت زدہ بیماریوں میں سے ایک ہے۔ جو کہ انسانی زندگی پر وار کرتی ہے۔
کنیسر کی تشخص ہر مریض کی الگ الگ ہو تی ہے یا تبدیل ہوتی ہوتی رہتی ہے۔ جبکہ کنیسر کے مقابلے میں آپ اس پر یقین کرتے ہیں جو کہ آپ پسند کرتے ہیں ۔ کسی کی بھی صحت مشکلات بن بلائے آتیں ہیں جس طرح کے زندگی میں آتی ہیں ۔دوسری طرف کنیسر کے مر یض میں یہ معجزہ ہی ہو گا بلکہ میڈیکل فیلڈ میں کہ کرامت ڈاکڑ کے بغیر ہو۔
کبھی کبھی کسی مریض میں ٹھیک ہونے کی سائنسی تو واضح نہیں ہوتی۔ اسی چیزکو ہی معجزہ کہتے ہیں۔ بہر حال زیادہ تر لوگ نہیں سمجھتے کہ روحانیت کا مذ ہیب اور انسانی زندگی سے گہرا تعلق ہے۔ اور یہ تعلق انسانی جسم اور روح سے ہوتا ہے۔جبکہ روح ہمیشہ پاک ہوتی ہے۔ اور اس کا کوئی علاج نہیں ہوتا گناہ انسان کرتا ہے۔ دوسری طرف کنیسر کا روح اور انسان کا آپس میںکیا تعلق ہے؟ یہ تمام رابطے ایک ہیں کنیسر کے مر یض میں روحانیت ، مذہیب ایک اہم رول ادا کرتے ہیں کنیسر ایک بڑا اہم اثر چھوڑتے ہیں نہ صرف جسمانی صحت پر بلکہ ذہنی صحت پر بھی ۔ اس عمل کی خرابی سے نہ صرف روحانیت پر بلکہ اس کو استعمال کرنے کی صیلاحت پر بُرا اثر پڑتا ہے۔ جو مریض کوطاقت دیتی ہے کہ وہ بیماری کے پچھے دیکھے کہ وجہ کیا ہے۔ معیا ر زندگی کو بہتر بنائے۔
زیادہ تر کنیسر کے مریض آپنے آپ کو روحانی طور پر مضبوط کرتے ہیں۔جسکی بنیادی وجہ اس بیماری کی اچانک تشخیص ہوتی ہے۔ ہر کوئی جانتا ہے کہ روحانیت کا مطلب یہ نہیں کہ مذہبی ہوتا ہے۔ بہر حا ل روحانیت کی تعلیم اور اسکی مشق بہت ساری بیماریوں کے علاج اور اُن بہتری کے لیے استعمال ہورہی ہیں ۔ حتی کہ آج جب کے جدید ترین منشیری اور جدید علم کی موجوگی میں بیت ساری روحانی تعلمات کنیسر کے علاج میں مدد گار ہوسکتی ہے۔
عمو ماً جو لوگ مذہبی ہوتے ہیں وہ اس طرح کی بیما ری معلوم ہونے کے بعد زیادہ مذہبی ہو جا تے ہیں۔ جب ہم مذہب اور کنیسر کےدرمیان رُبطہ کی با ت کرتے ہیں تو بحث ہم کو حقیقت بتاتی ہے کہ کتنے ہی لوگ ہیں جو یقین رکھتے ہیں وہ جو عبادت کرتے ہیں یا دعا کرتے ہیں؟ کیا وہ صیح ہے۔ کتنے ہی کنیسر کے مریض آپ نے دیکھے ہیں جو کہ خدا اور مذ ہب کی طاقت پر مکمل یقین اور اعتماد کرتے ہیں ۔ یہاں تک کہ ایک انتہائی مذہبی آدمی بھی شک کرتا ہے کہ مذہب بھی اُس کو اس موذی مرض سے نہیں بچا سکتا۔جس کو ہم سب کنیسر کے نام سے جانتے ہیں ۔ آپ محسوس کرتے ہیں کہ آپ کا روحانی یا مذہبی تعلق کچھ نہیں کر سکتا یا جب تک آپ اُن پر مکمل یقین نہیں کرتے با آخر جب تک آپ مکمل اعتماد نہیں کرتے آپ کی دعا میں اتنی طاقتور ہیں جتنی کہ آپ چاہتے ہیں ۔ آپکی دلی خواہش مکمل اس پر اعنصار کرتی ہیں کہ آپ کا یقین اور اعتماد کتنا ہے۔یہ آپ کی امید خواہش اور اندرونی اطمنان بڑھاتی ہیں ۔ جو کہ آپ یقین کی طاقت ہیں نظر آتا ہے۔ اسی طرح جب ایک دفعہ آپ کی روحانی طاقت پر یقین کر لیا تو پھر کوئی چیز آپ کو روک نہیں سکتی اپنی منزل کو پانے اور ایک اچھی صحت کی نشانی ہے۔
بے چینی ، مایوسی ، اکیلا پن اور دوسری جسمانی کمزوریاں اس خطر ناک بیماری کی نشانی ہے۔ ماہرین کی ریشرچ کے مطابق روحانی علاج ایک سیدھا اور مثبت اثر ہے جو کہ آپکی صحت پر پڑتا ہے اور یہ آپ کی زندگی تمام بُرے وصف کم بلکہ اُس کے خطرے کو بھی کم کرتی ہے۔ اور یہ خواہش کہ مہلک بیماری سے بچنا اور انتہائی مطمن زندگی اس کے نتیجے میں یہ تمام چیز یں تب ہی ممکن ہے کہ آپ اپنے اوپر اور اپنے علاج پر مکمل یقین اور اعتماد ہو۔اس سہارے پر ان گنت لوگ اس بیماری کی وجہ سے مر گئے اور زندہ رہتے رہے۔ تب بھی اس بیماری کی تشخیص کے بعد یہ ایک بالکل ڈرانا خواب ہے۔صرف مریض کے لیے اُس کے خاندان اور دوستوں کے لیے بھی سب سے پہلے یہ چیز ہے کہ تمام نئے کنیسر کے مریض کی صحت یابی کی دعا کی جائے ۔یہ اگر چہ کوئی علاج نہیں ہے تب بھی اُس مریض کی جذ باتی مدد جو کہ عموماً روحانی تعلق سے آتی ہے۔ دستیاب وسائل ، خواہشات یہ تمام چیزیں جو ظاہر میں صحت کے لیے ضروری ہے ساتھ ٹھیک روحانی مدد وہ اپنے مرض سے لڑنا ہے کئی با رہم نے سنا کہ کنیسر کا مریض مایوسی اور بلکہ خود کے مقابلے میں بیماری کی بے چنی کی وجہ سے مر سکتا ہے۔ سنا ہے کہ ایک بہترین سوچ ۔۔۔۔۔۔۔ کی ترقی کو زندہ کرنے کی کوشش ہیں کنیسر کے مریض کے لیے لازمی ضرورت بن جاتا ہے۔نئے تشخیص کنیسر کے مریض وہ تمام محددو امکانات کو اس کے لیے موجود ہیں کہ دریافت کرنے اور عملی والوں کے استعمال کر سکتے ہیں کہ ذہنی اور روحانی جسمانی کی حمایت بہت ضروری ہے۔ صحت اور شفا یابی دو مختلف حالتیں ہیں کنیسر کی ابتدائی تشخیص کے بعد انتہائی کنیسر کے علاج کی تلاش کے علاوہ تا ہم کبھی کبھی یہ اس مرض کا علاج کرنے اور زیر علاج کے لیے کئی سال لگ سکتے ہیں۔
آپ کو زیادہ روحانی طور پر فعال کی مدد پہچنے کے لیے اس میدان کے انتہائی تعلم یافتہ (ماہر) لوگ زیر یلا کنیسر کے علاج مریض کے دماغ اور جسم کے لیے بہت بہت تکلیف دہ ہو سکتا ہے۔لیکن ایک بار روحانی سفر شروع ہوتا ہے۔ تو وہ اپنے آپ کو ۔۔۔۔۔۔ ہونے کے لیے اپنے یقین اور اعتماد کو دوبارہ دعوت دیتا ہے۔آپ کو یقین اور اعتما د کو اکٹھے کرنا ہوگا اپنے آپ میں اور علاج میں چاہیے یا سانئسی علاج ہو یا روحانی ، تب آپ اس سے ہمیشہ کے لیے چھٹکار ا پالیں گے ۔ آپ انے آپ کو چیلنج کرتے ہیں کہ میں اس بیماری سے نجات حاصل کرکے رہو گا ۔ تو جو آپ کے روھانی سفر آپ کی مدد کرسکتے ہیں اور آپ کو اپنے روحانی  کو موثر بنا سکتے ہیں ۔ جو ایک ماہر پیشہ وارنہانتخا ب کرنا ہے۔ ایسا کرنے کے لیے کسی کو اپنے ساتھ شامل کرنا ہے